31.7 C
Delhi
May 24, 2024
Hamari Duniya
Breaking News قومی خبریں

یو پی ایس سی آر منصوبہ کو خصوصی مقام دلانے کیلئے وزیراعلیٰ یوگی پرعزم

یو پی ایس سی آر منصوبہ بند ترقی کی نئی راہ دکھائے گا
انٹیگریٹڈ ایکشن پلان تیزی سے معاشی ترقی کا باعث بنے گا
روزگار پیدا ہوگا اور منصوبہ بند ترقی کو رفتار ملے گی
چیف سکریٹری اور پرنسپل سکریٹری ہاؤسنگ کی سربراہی میں دو الگ الگ کمیٹیاں ہوں گی
یو پی ایس سی آر متوازن اور جامع ترقی کا ماڈل ہوگا، این سی آر کی طرز پر تشکیل دیا جائے گا
ایک ہفتہ میں تیار ہوگا ایس سی آر کا ایکشن پلان ، 6 اضلاع کو شامل کرنے کی تیاری

لکھنؤ،(ایچ ڈی نیوز)۔
متوازن، جامع اور پائیدار شہری منصوبہ بندی کے جن مقاصد کے ساتھ وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نےاتر پردیش اسٹیٹ کیپٹل ریجن کا تصور کیا ہے۔ عام آدمی کو زندگی کی آسانی کے تمام پیرامیٹرز پر عالمی معیار کا احساس دلانا اس کی ترجیحات میں شامل ہے۔ ملک میں پہلی بار، یہ خصوصی دارالحکومت خطہ، جو کسی ریاست میں بننے جا رہا ہے، اس کا مقصد دارالحکومت پر بڑھتی ہوئی آبادی کی وجہ سے بنیادی ڈھانچے پر دباو¿، غیر منصوبہ بند ترقی، کسی خاص علاقے کی ترقی جیسے چیلنجوں کا حل تلاش کرنا ہے۔ وزیراعلیٰ کا ارادہ ہے کہ اس مخصوص شعبے کو روزی روٹی انڈیکس میں پائیداری، صحت کی دیکھ بھال، ثقافت، ماحولیات، تعلیم اور انفراسٹرکچر کے عالمی معیار کے مطابق بنایا جائے۔ وزیراعلیٰ کی ہدایات کے بعد اب محکمہ ہاؤسنگ اینڈ اربن پلاننگ اس کا ایکشن پلان تیار کر رہا ہے۔ریاست کی راجدھانی ہونے کی وجہ سے بظاہر لکھنؤ کی ترقی دوسرے اضلاع سے کہیں زیادہ ہے۔ تعلیم، صحت، پرتعیش شہری سہولیات کے ساتھ، لکھنو¿میں رہنا پچھلے 5 سالوں میں زیادہ آرام دہ ہو گیا ہے۔ بہتر انفراسٹرکچر ہونے کی وجہ سے سرمایہ کار بھی لکھنو¿ کی طرف راغب ہو رہے ہیں، اس لیے روزگار کے معاملے میں بے پناہ مواقع ہیں۔ ایسے میں دوسرے اضلاع کے لوگوں کی بڑی تعداد یہاں اپنا مستقل ٹھکانہ بنانا چاہتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ رئیل اسٹیٹ سیکٹر میں تیزی ہے، لیکن ان سب کے درمیان انفراسٹرکچر پر دباو¿ بڑھ رہا ہے، ساتھ ہی غیر منصوبہ بند ترقی کا مسئلہ بھی پیدا ہو رہا ہے۔
وزیر اعلی یوگی ان مسائل کا مستقل حل دینے کیلئے کوشاں ہیں۔ ماضی میں ریاستی دارالحکومت علاقہ کے بارے میں اپنے وڑن کا اشتراک کرتے ہوئے، وزیر اعلیٰ نے $1 ٹریلین معیشت کے ہدف کو پورا کرنے میں تمام اضلاع کے کردار پر زور دیا۔ راجدھانی لکھنو¿ پر دباو¿کم ہونا چاہیے اور اناو¿، رائے بریلی، کانپور نگر اور کانپور دیہات میں ہائی ٹیک ٹاو¿ن شپ، بارہ بنکی، میٹرو سروس، صنعتی ترقی میں توازن، اس کے لیے ایک مربوط ترقیاتی منصوبہ بنایا جانا چاہیے اور اس کیلئے راجدھانی کو سینٹر میں رکھتے ہوئے ایک مکمل جامع منصوبہ بندی کی شدید ضرورت ہے۔ اگر وزیراعلیٰ یوگی کی کوششیں رنگ لائیں تو ریاست کا راجدھانی علاقہ ( ایس سی آر ) بین اضلاع علاقائی منصوبہ بندی اور ترقی کی ایک منفرد مثال ہوگا۔ ابتدائی طور پر دارالحکومت لکھنؤ، اناؤ، رائے بریلی، بارہ بنکی، کانپور نگر اور کانپور دیہات اضلاع کا پورا علاقہ اس اسکیم میں شامل کیا جا رہا ہے۔ تاہم حتمی فیصلہ تفصیلی ایکشن پلان کی تیاری کے بعد کیا جائے گا۔کوآرڈینیشن، فیصلے اور نگرانی کے لیے حکومتی سطح کی کمیٹیاں بنائی جائیں گی۔ریاستی دارالحکومت علاقہ کے لیے دو بڑی کمیٹیاں تشکیل دینے کی تیاریاں جاری ہیں۔ پہلے چیف سیکریٹری کی سربراہی میں ایک اعلیٰ اختیاراتی کمیٹی ہوگی جس میں تمام متعلقہ محکموں کے ایڈیشنل چیف سیکریٹریز/پرنسپل سیکریٹریز شامل ہوں گے، جبکہ ایک اور ایگزیکٹو کمیٹی ہوگی جو کہ ایڈیشنل چیف سیکریٹری/ پرنسپل سیکریٹری ہاؤسنگ اینڈ اربن پلاننگ کی سربراہی میں تشکیل دی جائے گی۔ اس کمیٹی میں لکھنو¿، کانپور اور ایودھیا ڈویڑن کے ڈویڑنل کمشنر، تمام متعلقہ اضلاع کے ضلع مجسٹریٹ، متعلقہ ترقیاتی منصوبوں کے وائس چیئرمین اور دیگر ماہرین شامل ہوں گے۔ساتھ ہی سرکار کی کوشش ہے کہ مربوط اور متوازن ترقی کے لیے دارالحکومت کے طور پر لکھنو¿ کی صلاحیتوں کو بڑھانا۔لکھنو¿ اور ملحقہ اضلاع کی صلاحیتوں کا مربوط استعمال کرنا۔اقتصادی ترقی کو تیز کرنے کی کوشش۔متوازن اور جامع صنعتی ترقی کے لیے مختصر مدت اور طویل مدتی مربوط ایکشن پلان تیار کرنا۔روزگار کے نئے مواقع پیدا کرنا۔فی کس آمدنی بڑھانے کے لیے ٹھوس کوششیں کرنا۔تعلیم اور صحت کے لئے عالمی معیار کا بنیادی ڈھانچہ تیار کرنا۔

Related posts

سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کیلئے بڑی خوشخبری، فیس بک اور انسٹا گرام اکاونٹس بحال

Hamari Duniya

سندھیا کے گڑھ میں گرجیں گی پرینکا،تیاریوں میں مصروف ہے کانگریس

Hamari Duniya

جیو نے  لانچ کیا پوسٹ پیڈ فیملی پلان، صارفین کیلئے ٹرائل فری

Hamari Duniya