33.1 C
Delhi
June 15, 2024
Hamari Duniya
Breaking News دہلی

جامعہ تشدد معاملے میں شرجیل امام باعزت بری

Sharjeel Imam

نئی دہلی ، 04 فروری (ایچ ڈی نیوز)۔
دہلی کی ساکیت عدالت نے 2019 کے جامعہ تشدد کیس میں شرجیل امام سمیت 11 ملزمان کو بری کر دیا ہے۔ ایڈیشنل سیشن جج ارول ورما نے یہ حکم دیا۔شرجیل امام کے علاوہ جن ملزمان کو عدالت نے بری کیا ہے ان میں آصف اقبال کانہا ، صفورا زرگر ، محمد ابو جر ، عمیر احمد ، محمد شعیب ، محمد انور ، محمد قاسم ، محمد بلال ندیم ، شہزاد رضا خان اور چندا یادیو شامل ہیں۔
جامعہ تشدد میں بری ہونے کے باوجود شرجیل کو اب بھی جیل میں ہی رہنا پڑے گا کیونکہ وہ دہلی تشدد سازش کیس کے سلسلے میں جیل میں ہیں۔
شرجیل امام کو 25 اگست 2020 کو بہار سے گرفتار کیا گیا تھا۔ دہلی پولیس نے یو اے پی اے کے تحت شرجیل امام کے خلاف داخل کی گئی چارج شیٹ میں کہا ہے کہ شرجیل امام شہریت ترمیمی قانون کے خلاف مظاہروں کو آل انڈیا سطح پر لے جانے کی کوشش کر رہے تھے۔ چارج شیٹ میں کہا گیا ہے کہ شرجیل امام نے مرکزی حکومت کے خلاف نفرت پھیلانے اور تشدد بھڑکانے کے لیے تقریر کی ، جس کی وجہ سے دسمبر 2019 میں تشدد ہوا تھا۔
دہلی پولیس نے کہا ہے کہ شہریت ترمیمی قانون کے خلاف احتجاج کی آڑ میں ایک گہری سازش رچی گئی تھی۔ مسلم اکثریتی علاقوں میں اس قانون کے خلاف پروپیگنڈا کیا گیا۔ یہ عام کیا گیا کہ مسلمان اپنی شہریت کھو دیں گے اور انہیں حراستی کیمپوں میں رکھا جائے گا۔

Related posts

مودی حکومت کو عوام کے مفادات سے کوئی سروکار نہیں :کھڑگے

Hamari Duniya

فوج کے جوانوں نے 4 دہشت گردوں کو موت کی نیند سلادیا، ناپاک سازش ناکام

Hamari Duniya

انگلینڈ ٹی 20 عالمی کپ کا نیا چمپئن بن گیا، پاکستان کو 5 وکٹ سے شکست

Hamari Duniya