36.1 C
Delhi
May 21, 2024
Hamari Duniya
Breaking News دہلی

ایم سی ڈی الیکشن میں مجلس اور چند شیکھر کی پارٹی میں اتحاد، بگاڑ دے گا کئی پارٹیوں کا کھیل

AIMIM- Azad Samaj Party

نئی دہلی(ایچ ڈی نیوز)۔
آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین اور آزاد سماج پارٹی سمیت کئی دیگر جماعتوں نے ایک اہم پریس کانفرنس کرتے ہوئے دہلی میونسپل کارپوریشن کے انتخابات میں اتحاد اور ایک ساتھ انتخا بی میدان میں اترنے کا اعلان کیا ہے۔ہوٹل ریور ویو دہلی میں مجلس کے ریاستی صدر کلیم الحفیظ اور آزاد سماج پارٹی کے انچارج نرین بھیکو رام جین نے مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔پریس کانفرنس میں اے آئی ایم آئی ایم کے ریاستی صدر کلیم الحفیظ نے کہا کہ آزاد سماج پارٹی اور مجلس و دیگر پارٹیوں نے کارپوریشن انتخاب کے لئے 100وارڈ سیٹوں پر متحد ہوکر الیکشن لڑنے پر اتفاق کیا ہے۔ اس اتحاد کو دونوں جماعتوں کے اعلیٰ کمان مجلس صدر بیرسٹر اسد الدین اویسی اور آزاد سماج پارٹی کے صدر چندر شیکھر آزاد نے بھی منظوری دے دی ہے۔ اس کے ساتھ ہی لبرل پارٹی آف انڈیا بھی اتحاد کا حصہ بنے گی۔
کلیم الحفیظ نے کہا کہ مجلس 100 سیٹوں میں سے 68 وارڈ سیٹوں پر امیدوار کھڑے کرے گی اور آزاد سماج پارٹی 32 سیٹوں پر امیدوار کھڑے کرے گی۔ اتحاد میں شامل پارٹیاں ان سیٹوں پر ایک دوسرے کے خلاف امیدوار نہیں اتاریں گی۔کلیم الحفیظ نے کہا کہ دونوں پارٹیاں اس بات پر متفق ہیں کہ دہلی میں بھارتیہ جنتا پارٹی اور عام آدمی پارٹی نے عوام کو دھوکہ دیا ہے، خاص طور پر دلت مسلم اکثریتی علاقوں کو مکمل طور پر نظر انداز کر دیا گیا ہے۔

دہلی میں مسلم کمیونٹی کی آبادی 15% ہے جبکہ دلت سماج کی آبادی 16فیصد ہے۔ دلت مسلم اکثریتی علاقوں میں نہ تو اسکول کھولے گئے اور نہ ہی اسپتال اور محلہ کلینک جیسی صحت کی خدمات فراہم کی گئیں۔ دلت مسلم اکثریتی علاقوں کو جان بوجھ کر گندا رکھنے کا کام کیا گیا،ان علاقوں اور کالونیوں میں صفائی اور کچرا ہٹانے کا کام بی جے پی نے نہیں کیا۔ میرا سوال یہ ہے کہ جب دہلی کے دیگر علاقے صاف ستھرا ہو سکتے ہیں تو ان علاقوں کی ضرورت کے مطابق صفائی ملازمین کیوں نہیں دیے جاتے؟ دوسری طرف عام آدمی پارٹی نے دہلی کے پوش علاقوں میں 4 محلہ کلینک کھولے ہیں جبکہ دلت مسلم علاقوں میں صرف ایک محلہ کلینک ہے۔ یہ امتیازی سلوک مزید برداشت نہیں کیا جائے گا۔ آزاد سماج پارٹی کے لیڈر اور دہلی الیکشن انچارج نرین بھیکو رام جین نے کہا کہ اب تک جو ناانصافی ہوتی رہی ہے اسے ختم کرنے کا وقت آگیا ہے۔ جب دلت مسلمان ایک ساتھ ہوں گے تو کوئی بھی انہیں نظر انداز نہیں کر سکے گا۔

دہلی میں ہمارا ‘حصہ داری اتحاد’ پوری طاقت کے ساتھ الیکشن لڑے گا اور بی جے پی اور عام آدمی پارٹی جیسی دھوکہ باز سیاسی جماعتوں کو اقتدار سے بے دخل کرنے کا کام کرے گا۔لبرل پارٹی آف انڈیا کے صدر سراج ساحل نے کہا کہ بی جے پی اور عام آدمی پارٹی نے دہلی کی دلت مسلم سماج کے ساتھ ساتھ دیگر برادریوں اور عوام کو بھی دھوکہ دینے کا کام کیا ہے، عام آدمی پارٹی اور بی جے پی نے پسماندہ طبقات کی بہتری اور ترقی کے لیے کوئی کام نہیں کیا۔ لیکن پوری دہلی میں شراب کے ٹھیکے کھولنے کا کام کیا گیا، جس سے یہ واضح ہو گیا ہے کہ بی جے پی اور عام آدمی پارٹی ہمارے لوگوں کو آگے نہیں بڑھنے دینا چاہتے اور ایک دوسرے کے ساتھ ملی بھگت سے اقتدار میں رہنا چاہتے ہیں لیکن یہ سازش کامیاب نہیں ہونے دی جائے گی۔پریس کانفرنس سے خطاب کرنے والوں میں سید انور اقبال نقوی سکریٹری دہلی مجلس ، شاہ عالم صدیقی جنرل سکریٹری دہلی مجلس ،مہیش پہل صدر دہلی پردیش آزاد سماج پارٹی، ہمانشو بالمیکی صدر بھیم آرمی دہلی کے نام نمایاں طور پر شامل ہیں۔

Related posts

مولانا ابولکلام آزاد ۔ایک انجمن، ایک تحریک

Hamari Duniya

وزیراعلیٰ اروند کیجریوال بھی ہوں گے گرفتار؟ دہلی کی سیاست میں بھونچال آنے والا ہے

Hamari Duniya

دہلی حکومت گرانے کےلئے ممبران اسمبلی کو20سے25کروڑ روپے کی پیشکش ،کئی ایم ایل اے رابطے سے باہر

Hamari Duniya