18.1 C
Delhi
February 29, 2024
Hamari Duniya
Breaking News دہلی

نائب وزیراعلیٰ نے لیفٹیننٹ گورنر کو پھر لکھا خط،افسروں پر بڑی سازش کا الزام عائد کردیا

منیش سسودیا

نئی دہلی، 15 جنوری (ایچ ڈی نیوز)۔
دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے اتوار کو لیفٹیننٹ گورنر (ایل جی) ونے کمار سکسینہ کو ایک خط لکھا ہے۔ خط میں انہوں نے کہا کہ ایم سی ڈی انتخابات سے قبل سازش کے تحت محکمہ صحت اور مالیات کے افسران نے محلہ کلینک کے انتظامات کو ٹھپ کر دیا ہے۔ ایل جی ان افسران کو فوری طور پر معطل کرے اور ایف آئی آر درج کرے۔ ورنہ یہ ثابت ہو جائے گا کہ ایل جی نے انتخابی فائدے کے لیے خدمات کے اختیارات کا غلط استعمال کر کے دہلی کے لوگوں کے ساتھ غلط کیا ہے۔


سسودیا نے اپنے خط میں لکھا ہے کہ دہلی میں ایم سی ڈی انتخابات سے ٹھیک پہلے دہلی کے لوگوں کو پریشان کرنے کی گہری سازش رچی گئی۔ آپ جانتے ہیں کہ دہلی حکومت کی طرف سے بنائے گئے محلہ کلینک میں ہر ماہ تقریباً 15 لاکھ لوگ اپنے علاج کے لیے آتے ہیں۔ ایم بی بی ایس ڈاکٹر محلہ کلینک میں لوگوں کا علاج کرتے ہیں۔ اس کے ٹیسٹ اور ادویات مفت دی جاتی ہیں۔دہلی کے کونے کونے میں محلہ کلینک قائم ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ لوگ اپنے آس پاس کے محلہ کلینک تک بہت آسانی سے پہنچ جاتے ہیں۔ ایم سی ڈی انتخابات سے عین قبل محلہ کلینک کے اس پورے نظام کو روکنے کی سازش رچی گئی۔
دہلی حکومت میں بیٹھے کچھ افسران نے جان بوجھ کر فائلوں کو اس طرح گھمایا کہ ایم سی ڈی انتخابات سے صرف دو ماہ قبل یعنی اکتوبر اور نومبر میں محلہ کلینک کے ڈاکٹروں کو تنخواہ نہیں دی گئی۔ محلہ کلینک میں ہونے والے تمام ٹیسٹ روک دیے گئے، تاکہ تنخواہ نہ ملنے کی وجہ سے اگر ڈاکٹر محلہ کلینک پر نہیں آتے اور لوگوں کا علاج بھی کرنا چاہتے ہیں تو بیماری کے علاج کے لیے ضروری ٹیسٹ کروا سکتے ہیں۔ نہ کیا جائے. یہی نہیں محلہ کلینک کے بجلی کے بل بھی روک دیئے گئے اور کرائے کی عمارتوں میں چلنے والے محلہ کلینک کا کرایہ بھی جمع نہیں ہونے دیا گیا۔ یہ سب کچھ اس لیے کیا گیا کہ عوام ہماری حکومت سے ناراض ہوجائیں۔ڈاکٹروں کو تنخواہ نہ ملنے کی وجہ سے پریشان ہوں گے اور وہ بھی حکومت سے ناراض ہو جائیں گے۔ محکمہ صحت اور محکمہ خزانہ کے افسران کوئی نہ کوئی بہانہ بنا کر فائلوں کو ادھر سے ادھر منتقل کرتے رہے۔
سسودیا نے کہا کہ جب میں نے اس بارے میں عہدیداروں سے بات کی تو سرکاری طور پر وہ کچھ تکنیکی وجوہات بتاتے رہے لیکن دبے لہجے میں کہتے رہے کہ ایل جی کی طرف سے سخت ہدایت ہے کہ ایم سی ڈی انتخابات سے پہلے ادائیگی نہ کی جائے۔ آپ کو معطل کر دیا جائے گا. چونکہ آپ کے پاس ”سروسز“ ہیں اس لیے تمام افسران آپ سے ڈرتے ہیں۔ دہلی میں محلہ کلینک کا نظام گزشتہ سات سالوں سے کامیابی سے چل رہا ہے۔ کبھی ایسی پریشانی کا سامنا نہیں کرنا پڑا۔ڈاکٹروں کو ہمیشہ اس نظام کے تحت تنخواہ ملتی رہی ہے۔ عام لوگوں کے لیے ٹیسٹ ہو چکے ہیں۔ مزے کی بات یہ ہے کہ انتخابات ختم ہوتے ہی دسمبر میں اچانک تمام اعتراضات دور کر دیے گئے اور تمام ادائیگیاں کر دی گئیں، یہ کیسے ہوا؟ اس سے واضح ہوتا ہے کہ انتخابات سے صرف دو ماہ قبل محلہ کلینک سے متعلق تنخواہ اور دیگر ادائیگیاں روکنا ایک بڑی سازش کا حصہ تھا۔اس ساری سازش کے پیچھے ذمہ دار افسران کی نشاندہی کرکے انہیں فوری طور پر معطل کیا جائے۔ اگر آپ ان کے خلاف سخت ایکشن نہیں لیں گے تو لوگ کہیں گے کہ افسران آپ کے کہنے پر الیکشن سے پہلے یہ سازش رچ رہے تھے۔

Related posts

اڈانی گروپ پر بدعنوانی کا الزام ، اپوزیشن پارٹیوں نے پارلیمنٹ کو ٹھپ کردیا

Hamari Duniya

اعظم خان کے خاندان کی سیاست کا خاتمہ! اعظم خان کے بعد بیٹے عبداللہ اعظم کی اسمبلی رکنیت منسوخ

Hamari Duniya

ممبر اسمبلی حاجی محمد یونس کی رہائش گاہ پر آل انڈیا دینی مدارس بورڈ کی میٹنگ منعقد

Hamari Duniya