31.7 C
Delhi
May 24, 2024
Hamari Duniya
Breaking News دہلی

مبارک ہو دہلی والوں! پورے ملک کے مقابلے دہلی میں مہنگائی سب سے کم ہے: وزیراعلیٰ

Arvind Kejriwal

نئی دہلی، 25 جنوری (ایچ ڈی نیوز)۔

دہلی حکومت کی جانب سے بدھ کو چھترسال اسٹیڈیم میں یوم جمہوریہ کی تقریبات کا اہتمام کیا گیا۔ یوم جمہوریہ پورے ملک میں 26 جنوری کو منایا جاتا ہے، لیکن دہلی میں یہ تقریب 25 جنوری کو ہی ہوتی ہے۔ آج اس موقع پر وزیر اعلی اروند کیجریوال نے چھترسال اسٹیڈیم میں پرچم کشائی کی، اس کے بعد پریڈ کا معائنہ کرنے نکلے۔ دہلی پولیس کی کھلی جیپ میں سوار ہو کر وزیر اعلیٰ نے دہلی پولیس، فائر سروس، خواتین بٹالین سمیت کئی اسکولوں کی پریڈ کا معائنہ کیا۔
اپنے خطاب کے دوران وزیر اعلیٰ نے کہا کہ آج ہم ایک طرف 74 واں یوم جمہوریہ منا رہے ہیں اور دوسری طرف آزادی کے 75 سال کا امرت مہوتسو۔ ملک کے مجاہدآزادی بھگت سنگھ، سبھاش چندر بوس راج گرو سمیت کئی نام ہیں۔ آزادی پسندوں نے اپنی جانیں خطرے میں ڈال کر ملک کو آزادی دلائی تھی۔ انہوں نے آزادی حاصل کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی۔ انہوں نے ہم پر بہت بڑی ذمہ داری چھوڑی ہے۔ آزادی کے متوالوں نے آزادی کے بعد آنے والی نسلوں پر جمہوریت جمہوریہ کو برقرار رکھنے اور مضبوط کرنے کی ذمہ داری سونپی ہے۔
وزیراعلیٰ اروند کیجریوال نے دہلی والوں کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ مرکزی حکومت کی رپورٹ کے مطابق اسٹارٹ اپس، ای وی، تعلیم، صحت، سی سی ٹی وی اور دہلی میں ہرے بھرے علاقے، یہ ملک میں نمبر ایک بن گیا ہے۔ سب کے ساتھ،مفت راشن، بجلی، پانی، تعلیم، صحت، بس سفر اور یاترا کی وجہ سے آج دہلی میں مہنگائی پورے ملک میں سب سے کم ہے۔ مرکزی حکومت کھانے پینے کی اشیاءسے جی ایس ٹی ہٹا کر مہنگائی سے عوام کو راحت دینے کے ساتھ جی ایس ٹی کو آسان بنائے۔وزیر اعلیٰ کیجریوال نے کہا کہ آج ملک کے ایک معروف اخبار میں یہ خبر شائع ہوئی ہے کہ چین نے ہمارے ملک کی زمین کے کچھ حصے پر قبضہ کر لیا ہے۔ یہ تمام ہندوستانیوں کے لیے تشویش کی بات ہے۔ ہمارے فوجی سرحد پر چین کا بہادری سے مقابلہ کر رہے ہیں۔ اس جنگ میں اپنے فوجیوں کے ساتھ کندھے سے کندھا ملا کر کھڑا ہونا ہر وطن عزیز کا فرض ہے۔ چین کا بائیکاٹ کر کے سخت پیغام دینا ہر ملک کا فرض ہے۔
اتنا ہی نہیں وزیر اعلیٰ نے چین کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے مرکزی حکومت کو بھی نشانہ بنایا۔ انہوں نے کہا کہ ایک طرف چین ہمیں آنکھ دکھا رہا ہے۔ ہماری زمین پر قبضہ دوسری طرف ہم چین کے ساتھ اپنی تجارت بڑھا رہے ہیں۔2020 میں، ہم نے چین سے 65 بلین ڈالر کا سامان خریدا۔ 2021 میں، ہم نے چین سے 95 بلین ڈالر کا سامان خریدا۔ ہم چین کو مزید امیر بنا رہے ہیں۔ چین ہمارے ہی پیسوں سے اسلحہ خریدتا ہے اور اپنی فوج میں سپاہی بھرتی کرتا ہے اور ہمارے خلاف کھڑا ہوتا ہے، جو سامان ہم چین سے خرید رہے ہیں وہ بھارت میں تیار ہو جائے تو اہل وطن کو روزگار ملے گا۔حکومت کو ٹیکس ملے گا اور ہماری معیشت ترقی کرے گی۔ اس کے ساتھ چین کو ایک مضبوط پیغام بھی جائے گا۔ وزیر اعلیٰ کیجریوال نے کہا کہ پچھلے 6 سالوں کے دوران 12 لاکھ کاروباری نظام سے ناخوش ہو کر ہندوستان چھوڑ کر دوسرے ممالک چلے گئے ہیں۔

Related posts

عالمی کپ ٹی -20سپر12 مرحلہ کا آج،بھارت-پاک میچ سے پہلے ملبورن میں شدیدبارش، لیکن

Hamari Duniya

سادگی اور نرم گفتاری مدن داس دیوی جی کی نمایاں خصوصیت، تنظیمی صلاحیتوں سے بھی تھے مالا مال

Hamari Duniya

راہل گاندھی کی محبت کی دوکان2024تک پورے بھارت میں کھل جائے گی:عمران پرتاپ گڑھی

Hamari Duniya