31.7 C
Delhi
April 15, 2024
Hamari Duniya
Breaking News قومی خبریں

بھارت جوڑو نیائے یاترا کے دوسرے مرحلے میں شامل ہوئیں پرینکا گاندھی، بی جے پی اور آرایس ایس پر جم کر برسے راہل گاندھی

Rahul Gandhi

مرادآباد ، 24 فروری (ایچ ڈی نیوز)۔
اتر پردیش میں کانگریس کے رکن پارلیمنٹ راہل گاندھی کی بھارت جوڑو نیا ئے یاترا کا دوسرا مرحلہ ہفتہ کو مرادآباد سے شروع ہوا۔ راہل کے ساتھ ان کی بہن اور پارٹی کی قومی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی واڈرا نے بھی یاترا میں حصہ لیا۔ نیا ئے یاترا میں کانگریس کے ساتھ ساتھ اتحادی جماعت سماج وادی پارٹی کے عہدیدار بھی موجود تھے۔اس موقع پر راہل گاندھی ، پرینکا گاندھی سمیت پارٹی کے کئی سرکردہ لیڈروں نے موجود لوگوں سے خطاب کیا۔ راہل نے بی جے پی پر شدید حملہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ محب وطن نفرت کی نہیں محبت کی دکان چلاتے ہیں۔ نفرت ہمیشہ محبت سے کاٹی جاتی ہے۔ ہمیں عہد کرنا چاہیے کہ ہم اس ملک میں نفرت پھیلانے نہیں دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کے 90 فیصد لوگوں میں دلت ، پسماندہ طبقات ، قبائلی اور اقلیتیں شامل ہیں، لیکن ملک کی بڑی کمپنیوں کے مالکان ان 90 فیصد لوگوں میں شامل نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جس طرح ہڈی ٹوٹنے پر پہلے مرحلے میں ہاتھ کا ایکسرے کیا جاتا ہے، اسی طرح پہلے مرحلے میں ذات پات کی مردم شماری ضروری ہے تاکہ ان میں سے 90 فیصد افراد ہر جگہ حصہ لے سکیں۔

Rahul Gandhi Piryanka Gandhi مرادآباد کی بہو پرینکا گاندھی واڈرا نے کہا کہ جب تک آپ تبدیلی نہیں لائیں گے آپ کے حالات نہیں بدلیں گے۔ تبدیلی تب آئے گی جب آپ اپنے حالات کو سمجھیں گے اور ووٹ دیں گے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ اس حکومت میں کسانوں کے قرضے معاف نہیں ہوتے ، صرف بڑے صنعت کاروں کے قرضے معاف ہوتے ہیں۔ اس موقع پر کانگریس اقلیتی شعبہ کے چیئرمین عمران پرتاپ گڑھی ، کانگریس کے ریاستی صدر اجے رائے، قومی سکریٹریز پردیپ ناروال اور سنجے کپور ، کانگریس ضلع صدر اسلم خورشید ، شہر صدر انوبھو مہروترا وغیرہ عہدیدار اور کارکنان موجود تھے۔

Related posts

اسرو چندریان۔تین مشن میں جامعہ ملیہ اسلامیہ کے سابق طالب علم محمد عدنان کا اہم رول

Hamari Duniya

اتراکھنڈ میں مزارات کی مسماری ،مولانا توقیر احمد رضا خان نے بڑی دھمکی دے دی

Hamari Duniya

 یونیفارم سول کوڈ آئین میں دئیے گئے بنیادی حقوق سے متصادم ، ناقابل قبول اور ملک کی یکجہتی اور سالمیت کے لئے نقصاندہ ہے: مولانا ارشد مدنی

Hamari Duniya