22.8 C
Delhi
February 24, 2024
Hamari Duniya
Breaking News دہلی

ہندو، سکھ اور بودھ دلتوں کی طرح مسلم دلتوں کو بھی ایس سی کٹیگری میں شامل کیا جائے:آل انڈیا یونائیٹڈ مسلم مورچہ کا مطالبہ

Ghulam Servar Press Conference

نئی دہلی(ایچ ڈی نیوز)۔
دلت مسلمانوں اور عیسائیوں کے حقوق سے متعلق مرکزی حکومت کی طرف سے قائم کردہ کمیشن کا خیر مقدم کرتے ہوئے ہم یہ کہنا چاہیں گے کہ مسلمانوں کی ایک بڑی آبادی دلت نسل کی ہے اور یہاں کی مقامی ہے۔اس آبادی کی تعلیمی، معاشی اور سماجی حیثیت دوسرے مذاہب کے پسماندہ دلتوں جیسی ہے۔ ان خیالات کا اظہار آل انڈیا یومائےٹڈ مسلم مورچہ کے قومی ترجمان حافظ غلام سرور نے مورچہ کے قومی دفتر میں منعقد پریس کانفرنس میں کیا ۔
پرےس کانفرنس میں شبیر احمد منصوری،شاہد رنگریز،نفیس سلمانی،عبدالحکیم ہواڑی ،دلشاد اختر سلمانی،محمد عالم فریدی،چاند محمد سیفی،مولانا شاداب حسین قاسمی بھی موجود تھے۔
صحافیوں سے بات کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ1936کے حکومتی حکم نامے میں ان کو بھی شیڈول کاسٹ کے زمرے میں رکھا گیا۔ہندو، سکھ اور بدھ مت کے دلت بھی اس زمرے میں شامل تھے۔صرف ہندوستانی عیسائیوں کو شیڈول کاسٹ کا درجہ نہیں دیا گیا۔یہ صرف 1950 کے نیشنل آرڈر کے ذریعے ہندو دلتوں کے لیے مخصوص تھا۔ بعد میں اس زمرے میں سکھ اور بدھ مذہب کے دلتوں کو بالترتیب شامل کیا گیاپچھلے 72 سالوں سے صرف دلت مسلمان ہی اس ریزرویشن سے محروم ہیں۔
گذشتہ25-26 سالوں سے ہم اس آبادی کو شیڈول کاسٹ کیٹیگری میں شامل کرنے کا مطالبہ کر رہے ہیں تاکہ وہ پڑھ لکھ کر ملک کے مرکزی دھارے میں شامل ہو سکیں۔ہمارے مطالبے کا مذہب کی تبدیلی سے کوئی تعلق نہیں ہے اور نہ ہی ہم تبدیلی کی حوصلہ افزائی کرنا چاہتے ہیں۔ہم ہمیشہ سے تبدیلی پر مکمل پابندی کے حق میں رہے ہیں اور آج بھی ہیں۔ہمارا مقصد صرف ہندوستانی سماج کی اس بڑی آبادی کو ملک کے مرکزی دھارے میں لانا ہے تاکہ عمومی سیاست کا خاتمہ ہوسکے۔

ہم اقتصادی بنیادوں پر کمزور اونچی ذات کے ریزرویشن پر سپریم کورٹ کے فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہیں اور کہتے ہیں کہ عدالت سے ہمیں بھی انصاف ملنے کی امید ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ جب سے وزیر اعظم نے پسماندہ مسلمانوں کی بات کو سامنے لایا ہے، تب سے دلت مسلمانوں میں بھی کافی امیدیں پیدا ہوئی ہیں۔ہم وزیر اعظم سے درخواست کرتے ہیں کہ ہندو، سکھ اور بدھ دلتوں کی طرح مسلم دلتوں کو بھی ایس سی کٹیگری میں شامل کیا جائے۔ اس کو شامل کرکے نہرو حکومت کی اس غلطی کو دور کرنے میں پہل کریں۔ برطانوی حکومت نے بھی عیسائی دلتوں کو نہیں دیا۔دلت عیسائی آبادی بہت کم ہے اور انہیں ریزرویشن کی ضرورت نہیں ہے۔پریس کانفرنس میں شبیر احمد منصوری،شاہد رنگریز،نفیس سلمانی،عبدالحکیم ہواڑی ،دلشاد اختر سلمانی،محمد عالم فریدی،چاند محمد سیفی،مولانا شاداب حسین قاسمی بھی موجود تھے۔

Related posts

وزیراعلیٰ کی بڑھتی مقبولیت سے بی جے پی پریشان،اب ڈی ٹی سی بس میں بدعنوانی، تفتیش سی بی آئی کے حوالے

Hamari Duniya

سعودی گزٹ کے سابق مینیجنگ ایڈیٹر طارق غازی صاحب سےعلیزے نجف کی ایک ملاقات

Hamari Duniya

ٹی-20 کرکٹ میںروہت شرما نے کیا کمال ، نکل گئے سب سے آگے

Hamari Duniya