18.1 C
Delhi
February 29, 2024
Hamari Duniya
Breaking News دہلی

۔8 ماہ سے وقف بورڈ نے مساجد کے ائمہ کو نہیں دی تنخواہیں

Imam Salary

نئی دہلی(ایچ ڈی نیوز)۔
دہلی وقف بورڈ کے اماموں نے گزشتہ 8 ماہ سے تنخواہوں کی عدم ادائیگی کے خلاف آج دریا گنج میں دہلی وقف بورڈ کے دفتر کا گھیراو کیا۔ خبر لکھے جانے تک درجنوں ائمہ وہاں موجود ہیں اور تنخواہوں کی عدم ادائیگی کے خلاف احتجاج کرنے وقف بورڈ کے دفتر پر بیٹھے ہیں۔اس سے قبل آج اماموں کا ایک وفد دہلی کے نائب وزیر اعلیٰ منیش سسودیا کے گھر ان سے ملنے پہنچا تھا لیکن سسودیا نے ان سے ملاقات نہیں کی۔ اماموں نے سسودیا کو ایک میمورنڈم دیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اگر انہیں جلد از جلد تنخواہ نہیں دی گئی تو وہ وزیر اعلیٰ کی رہائش گاہ کے باہر بھوک ہڑتال کریں گے۔

ائمہ کے وفد کی قیادت آل انڈیا امام ایسوسی ایشن کے صدر مولانا ساجد رشیدی کر رہے ہیں۔ دہلی وقف بورڈ میں موجود اماموں کا کہنا ہے کہ انہیں گزشتہ 8 ماہ سے تنخواہ نہیں دی گئی ہے جس کی وجہ سے ان کی حالت دن بدن قابل رحم ہوتی جارہی ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ جب سے اروند کیجریوال کی حکومت آئی ہے، ہر بار ان کی تنخواہ کو لے کر مسئلہ ہوتا ہے۔ یہاں موجود اماموں کا کہنا ہے کہ وہ آج یہاں سے اپنے گھروں کو واپس نہیں جائیں گے جب تک ان کا مسئلہ حل نہیں ہو جاتا اور انہیں کوئی ٹھوس یقین دہانی نہیں کرائی جاتی۔ دہلی وقف بورڈ کے تحت آنے والے مدرسہ عالیہ، مسجد فتح پوری کے عملے کو بھی گزشتہ 2 سال سے تنخواہ نہیں ملی ہے۔ یہاں کے اساتذہ بھی اماموں کے ساتھ بورڈ کا گھیراو کر رہے ہیں۔

یہاں کے استاد مولانا ابرار احمد نے بتایا کہ انہیں گزشتہ 2 سال سے تنخواہ نہیں دی جا رہی ہے، انہوں نے لیفٹیننٹ گورنر اور دہلی کے وزیر اعلیٰ سے بھی شکایت کی ہے، لیکن کوئی حل نہیں نکلا۔ان کا کہنا ہے کہ اتنے دنوں سے تنخواہ نہ ملنے کی وجہ سے انہیں کافی پریشانیوں کا سامنا ہے۔اس معاملے میں مولانا ساجد رشیدی کا کہنا ہے کہ اماموں کو کافی پریشانیوں کا سامنا ہے۔ تنخواہوں کی عدم ادائیگی کا کہنا ہے کہ اگر یہ مسئلہ جلد حل نہ کیا گیا تو وہ وزیر اعلیٰ کی رہائش گاہ کے باہر بھوک ہڑتال کرنے پر مجبور ہوں گے۔

Related posts

کم جونگ ان کو سنک سوار، داغ دیں 10 میزائلیں، جنوبی کوریا خوف سے لرز اٹھا

Hamari Duniya

بی جے پی نے سسودیا کو دیا’ آپ‘ کو توڑنے کا آفر، نائب وزیراعلیٰ نے دیا منہ توڑ جواب

Hamari Duniya

مسلمانوں کو بااختیار بنانے کیساتھ اقتصادی ترقی کو فروغ دینے کیلئے حلال معیشت اور متبادل پروٹین کو ہموار کرنا: محمد فرقان قریشی

Hamari Duniya